Dengue

تجربہ کامیاب ،سائنسدانوں کو ڈینگی بخار کا علاج مل گیا



سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ایک انقلابی تجربے میں ڈینگی بخار کے کیسز میں 77 فیصد کمی کی گئی ہے۔ اس تجربے میں یہ نتائج ڈینگی بخار پھیلانے والے مچھروں میں رد و بدل کر کے حاصل کیے گئے ہیں۔

سائنسدانوں نے اس تجربے میں ایسے مچھروں کا استعمال کیا جن کو ایک ‘کرشمائی’ بیکٹریا سے ’انفیکٹ‘ یا متاثر کیا گیا جس سے ان مچھروں کی ڈینگی پھیلانے کی صلاحیت قابل ذکر حد تک کم ہوگئی۔

یہ تجربہ انڈونیشیا کے شہر یوگیکارتا میں کیا گیا اور اب ڈینگی وائرس کو ختم کرنے کی امید کے ساتھ دوسرے علاقوں میں بھی کیا جا رہا ہے۔

مچھروں کے عالمی پروگرام کی ٹیم کا کہنا ہے کہ ڈینگی وائرس کا جو پوری دنیا میں پایا جاتا ہے، اس طریقے سے حل نکالا جا سکتا ہے۔

Facebook Comments
50% LikesVS
50% Dislikes