Imran khan

امریکہ 20 برس میں افغانستان کی جنگ نہ جیت سکا تو پاکستان میں اڈوں سے وہ کیسے یہ جنگ جیت سکتا ہے۔ وزیراعظم پاکستان



پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے امریکہ کو ایک بار پھر اڈے دینے سے صاف انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغان جنگ کے لیے امریکہ کو اڈے نہیں دیں گے،

اگر امریکہ کو اڈے فراہم کیے تو پاکستان میں دوبارہ دہشتگردی ہوسکتی ہے۔

عمران خان نے امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ میں لکھے گئے مضمون میں کہا کہ افغانستان میں جنگ کے دوران پاکستان نے بہت نقصان اٹھایا،

70 ہزار سے زائد پاکستانی جاں بحق ہوئے، امریکہ نے پاکستان کو 20 ارب ڈالر امداد فراہم کی جبکہ پاکستان کی معیشت کو 150 ارب ڈالرز کا نقصان ہوا،

امریکہ کے ساتھ شامل ہونے کے بعد پاکستان کو دہشتگردی کا سامنا کرنا پڑا، امریکی انخلا کے بعد کسی بھی تنازع میں پڑنے سے گریز کریں گے اس لئےکہ ہم اس کے متحمل نہیں ہوسکتے۔

پاکستان کے وزیراعظم  نےمضمون میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ اگر امریکہ طاقتور فوج کے ساتھ افغانستان میں 20 سال میں نہیں جیت سکا، تو ہمارے ملک سے اڈوں کے ساتھ کیسے جیتے گا،

تاریخ گواہ ہے کہ افغانستان کو باہر سے کنٹرول نہیں کیا جاسکتا۔ انہوں نے مزید کہا کہ افغانستان میں ہمارا کوئی پسندیدہ گروپ نہیں، ماضی میں ایک دھڑے کی حمایت کرنے کی وجہ سے پاکستان نے غلطی کی جسے دہرایا نہیں جائے گا

اس لئےافغان عوام کی حمایت سے بننے والی ہر حکومت کے ساتھ چلیں گے۔

مزید پڑھیں:یمن بچے بھی سڑکوں پر نکل آئے

Facebook Comments
50% LikesVS
50% Dislikes